Cart 0

Lastampokh: A travelogue in Urdu

کبھی وہ دن تھے جب ہم قطب سے مدار شمس کا زاویہ معلوم کرتے۔ تب لیل ونہار کی ہر گردش پرہمیں اپنی گرفت محسو س ہوتی۔ آج ہم قطب و ابدال کے جال میں پھنسے خود کو گردشِ ایام کے رحم وکرم پر پاتے ہیں۔ روحانیوں نے رفتہ رفتہ ہمارے اکتشافی ذہن کو کچھ اس طرح متاثر کیا کہ ہم نے قرآن کی دعوتِ اکتشاف سے منھ موڑ کر مکاشفے اور مجاہدے کو اپنا ہدف قرار دے ڈالا۔ دین کے نام پر ایک ہلوسہ ہمارے تعاقب میں رہا۔ نتیجتاً حقیقی دنیا میں ہم اقوام عالم پر اپنی سبقت برقرار نہ رکھ پائے۔ بحیثیتِ امت سیادت کے منصب سے ہماری معزولی عمل میں آگئی۔ روحانیوں کی سلطنت اپنی تمام تر جاہ و حشم کے ساتھ آج بھی قائم ہے بلکہ اس کی فتوحات کے سلسلے مسلسل وسیع ہوتے جارہے ہیں۔ البتہ اسلام کی آفاقی دعوت اور مسلمانوں کا اکتشافی ذہن صدیوں سے منجمد اور معطل ہے۔

جب تک عام مسلمانوں پر یہ حقیقت منکشف نہیں ہوتی کہ دینی زندگی کے مروجہ مظاہر، روحانیوں کی بیعت وکرامت کے سلسلے، دراصل اسلام نہیں بلکہ اسلام کی نفی کے پختہ انتظامات ہیں، جب تک رسالہ محمدی کی بازیافت کے لیے ایک عمومی بے چینی پیدا نہیں ہوتی، ایک نئی ابتدا کا سامان کیسے ہوسکتا ہے؟

Click Here to download Ebook

0.00

Clear
Product ID: 19059 SKU: 978-93-81461-14-3 Category:

راشد شاز ان چند مفکرینمیں سے ہیں جنھیں مشرقی اور مغربی علوم کے راست مطالعہ کی توفیق اور مختلف تہذیبوں سے تعامل کا وافر موقع ملا ہے۔ انہوں نے مسلم یونیورسٹی علی گڑھ سے انگریزی ادب میں پی ایچ ڈی کی ڈگری حاصل کی۔ عربی اور اسلامی علوم کے مطالعہ کے لیے وہ سوڈان گئے جہاں انھوں نے مرکز اسلامی افریقی (موجودہ بین الاقوامی افریقی یونیورسٹی) اور عربی زبان و ادب کی تعلیم کے عالمی ادارے المعہد العالی ، خرطوم سے اکتساب فیض کیا۔
۱۹۸۷ ؁ء میں، اپنے ایامِ طالب علمی کے دوران، آپ نے ہندوستان میں احیائے اسلام کا منشور شائع کیا جس نے ہندوستانی مسلمانوں کے منجمد فکری سمندر میں ہلچل کی کیفیت پیدا کر دی۔ ۱۹۹۱ء ؁ میں عملی اقدام کے طور پر نئی دہلی میں ہندوستانی مسلمانوں کا ملک گیر کنونشن منعقد ہوا۔ ۱۹۹۳ ؁ء میں آپ نے ملی پارلیامنٹ کی بِنا ڈالی جس کے مختلف اجلاس اور عوامی اجتماعات نے ہندوستانی مسلمانوں کو ایک نئے سیاسی رویے اور خود اعتمادی سے سرفراز کیا۔ ۱۹۹۴ء ؁میں نئی دہلی سے ’’ملی ٹائمز انٹرنیشنل‘‘ کے اجراء کے بعد آپ مسلسل اس کی نگرانی کرتے رہے۔۲۰۰۴ء ؁ میں فکرِ اسلامی کے احیاء کے لیے آپ نے دو ماہی علمی مجلہ فیوچر اسلام کا اجراء کیاجو بیک وقت انگریزی، اردو اور عربی زبانوں میں انٹرنیٹ پر شائع ہوتا ہے۔ ۲۰۰۵ء ؁ میں آپ نے بدلتی عالمی صورتِ حال پر تبادلۂ خیال کے لیے لندن میں ایک کانفرنس منعقد کی جس میں انقلابی گروہوں کو خود احتسابی اور ایک نئی ابتداء کی دعوت دی۔
ایک نئی مبنی برانصاف دنیا کے قیام کے لیے عالمی سطح پر ہونے والی مختلف جدوجہد اور بین الملی فورموں پر بھی آپ متحرک رہے ہیں۔ اس سلسلے میں آپ نے دنیا کے بیشتر ممالک کا سفر بھی کیا ہے۔
مسلم فکر اور امتِ مسلمہ کے مسائل پر آپ کے قلم سے اردو عربی اور انگریزی میں سیکڑوں چھوٹے بڑے مضامین اور کوئی تین درجن سے زائد چھوٹی بڑی کتابیں دہلی، بیروت، لندن اور ریاض سے شائع ہو چکی ہیں۔

Available Format

Paperback, PDF

Name of Author

Rashid Shaz

Language

Urdu

ISBN code

978-81-87856-23-8

Reviews

Be the first to review “Lastampokh: A travelogue in Urdu”